Sports Setup
Every Thing about Sports

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

Tata Motors Set to Launch Electric Vehicle Production at Sanand Plant in April - Sports Setup
Sports Setup
Every Thing about Sports

Tata Motors Set to Launch Electric Vehicle Production at Sanand Plant in April

0

In a strategic move, Tata Motors is gearing up to initiate the production of electric vehicles (EVs) at the Sanand plant, acquired from Ford India. This development is scheduled to kick off in April this year, according to a high-ranking official from the company. Tata Passenger Electric Mobility Ltd, a subsidiary of Tata Motors, secured the facility from Ford India for a sum of Rs 725.7 crore in January of the previous year.

Electric Revolution at Sanand

Tata Motors Passenger Vehicles Managing Director, Shailesh Chandra, shared the company’s plans, stating, “We are planning to commence electric vehicle production at Sanand with Nexon EV from April.” The manufacturing plant, initially focused on internal combustion engine-powered Nexon variants, currently boasts an installed capacity of 3 lakh units per annum, with the potential to scale up to 4.2 lakh units per annum.

Expanding the Horizon

Chandra also revealed that the company is eyeing the production of upcoming models at the Sanand facility. Regarding the product pipeline, he mentioned the introduction of the Curvv EV around the second or third quarter of the current calendar year. Additionally, the Harrier EV and the internal combustion engine (ICE) version of Curvv are expected to make their debut by the end of the year.

Strategic Growth and Outlook

In response to queries about the sales outlook for the next fiscal year, Chandra expressed optimism, projecting a 5% growth in the passenger vehicle industry. He emphasized, “We have a few launches planned, so will be targeting to grow better than the industry.” On the Budget wishlist, he urged the extension of FAME benefits to personal electric cars, citing its potential to accelerate the growth of electrification in the country.

Leveling the Playing Field

Chandra addressed concerns about competition, emphasizing Tata Motors’ readiness to face any players entering the EV space with upfront investments in localization or charging infrastructure development. He stated, “We are not afraid of the competition…we are effectively dealing with the competition; all we seek is a level playing field.”

Tata Motors اپریل میں سانند پلانٹ میں الیکٹرک گاڑیوں کی پیداوار شروع کرنے کے لیے تیار ہے۔ ایک اسٹریٹجک اقدام میں، ٹاٹا موٹرز فورڈ انڈیا سے حاصل کیے گئے سانند پلانٹ میں الیکٹرک گاڑیوں (EVs) کی پیداوار شروع کرنے کے لیے کمر بستہ ہے۔ کمپنی کے ایک اعلیٰ عہدے دار کے مطابق، یہ ترقی اس سال اپریل میں شروع ہونے والی ہے۔ Tata Passenger Electric Mobility Ltd، Tata Motors کے ذیلی ادارے نے پچھلے سال جنوری میں 725.7 کروڑ روپے کی رقم میں فورڈ انڈیا سے یہ سہولت حاصل کی۔ سانند میں برقی انقلاب Tata Motors Passenger Vehicles کے منیجنگ ڈائریکٹر شیلیش چندرا نے کمپنی کے منصوبوں کا اشتراک کرتے ہوئے کہا، “ہم اپریل سے Nexon EV کے ساتھ سانند میں برقی گاڑیوں کی پیداوار شروع کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔” مینوفیکچرنگ پلانٹ، ابتدائی طور پر اندرونی دہن کے انجن سے چلنے والے Nexon ویریئنٹس پر توجہ مرکوز کرتا ہے، فی الحال 3 لاکھ یونٹ سالانہ کی نصب صلاحیت کا حامل ہے، جس میں سالانہ 4.2 لاکھ یونٹس تک کی صلاحیت ہے۔ افق کو پھیلانا چندرا نے یہ بھی انکشاف کیا کہ کمپنی سنند سہولت میں آنے والے ماڈلز کی تیاری پر نظر رکھے ہوئے ہے۔ مصنوعات کی پائپ لائن کے بارے میں، انہوں نے موجودہ کیلنڈر سال کی دوسری یا تیسری سہ ماہی کے ارد گرد Curvv EV کے تعارف کا ذکر کیا۔ مزید برآں، Harrier EV اور Curvv کے انٹرنل کمبشن انجن (ICE) ورژن کے سال کے آخر تک اپنے آغاز کی توقع ہے۔ اسٹریٹجک ترقی اور آؤٹ لک اگلے مالی سال کے لیے سیلز آؤٹ لک کے بارے میں سوالات کے جواب میں، چندرا نے امید کا اظہار کیا، جس سے مسافر گاڑیوں کی صنعت میں 5% نمو متوقع ہے۔ انہوں نے زور دے کر کہا، “ہمارے پاس کچھ لانچوں کی منصوبہ بندی ہے، لہذا صنعت سے بہتر ترقی کرنے کا ہدف رکھا جائے گا۔” بجٹ کی خواہش کی فہرست میں، انہوں نے ملک میں بجلی کی ترقی کو تیز کرنے کی صلاحیت کا حوالہ دیتے ہوئے، ذاتی الیکٹرک کاروں تک FAME فوائد کی توسیع پر زور دیا۔ کھیل کے میدان کو برابر کرنا چندرا نے مسابقت کے بارے میں خدشات کو دور کرتے ہوئے، ٹاٹا موٹرز کی ای وی اسپیس میں داخل ہونے والے کسی بھی کھلاڑی کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار ہونے پر زور دیا جس میں لوکلائزیشن یا بنیادی ڈھانچے کی ترقی میں ابتدائی سرمایہ کاری کی جاتی ہے۔ انہوں نے کہا، “ہم مقابلے سے خوفزدہ نہیں ہیں… ہم مقابلے کے ساتھ مؤثر طریقے سے نمٹ رہے ہیں؛ ہم صرف ایک برابری کا میدان چاہتے ہیں۔”

Leave a Reply

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

Discover more from Sports Setup

Subscribe now to keep reading and get access to the full archive.

Continue reading